4/27/2017         ویزیٹ:654       کا کوڈ:۹۳۴۱۷۲          ارسال این مطلب به دیگران

استفتاءات: آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای » استفتاءات: آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای
  ،   اوقات نماز

نماز کی اہمیت اور شرائط...................................فہرست................................................قبلہ کے احکام

 

اوقات نماز
 
س358۔ شیعہ فرقہ نماز پنجگانہ کے وقت کے بارے میں کس دلیل پر اعتماد کرتا ہے ؟ جیسا کہ آپ جانتے ہیں اہل سنت وقت عشاء کے داخل ہو نے کو نماز مغرب کے قضا ہو نے کی دلیل قرار دیتے ہیں ، ظہر و عصر کی نماز کے بارے میں بھی ان کا یہی نظریہ ہے۔ اسی لئے وہ معتقد ہیں کہ جب وقت عشاء داخل ہو اور پیش نماز ، نماز عشاء پڑھنے کے لئے کھڑا ہو تو مامومین اس کے ساتھ مغرب کی نماز نہیں پڑھ سکتے ، اس لئے کہ ( اس طرح ) مغرب اور عشاء ایک ہی وقت میں پڑھ لی جائے گی؟
 
ج۔ دلیل ، آیات قرآنیہ اور سنت نبویہ کا اطلاق ہے ، اس کے علاوہ بہت سی روایتیں ہیں جو خاص طور سے دو نمازوں کو ملا کر پڑھنے کے جواز پر دلالت کرتی ہیں اور ظاہر ہے کہ اہل سنت کے یہاں بھی ایسی روایتیں ہیں جو دو نمازوں کو کسی ایک نماز کے وقت میں ادا کرنے پر دلالت کرتی ہیں۔
 
س359۔ اس بات کو پیش نظر رکھتے ہوئے کہ نماز عصر کا آخری وقت مغرب ہے اور نماز ظہر کا آخری وقت مغرب سے اتنا پہلے تک ہے جتنی دیر میں صرف نماز عصر پڑھی جا سکے۔ یہاں میں یہ سوال کرنا چاہتا ہوں کہ مغرب سے کیا مراد ہے ؟ کیا غروب آفتاب ہے یا اس شہر کے افق کے اعتبار سے اذان مغرب کا بلند ہو نا ہے ؟
 
ج۔ غروب آفتاب مراد نہیں ہے۔ بلکہ مراد، وقت اذان مغرب ہے یعنی جب مشرق کی سرخی زائل ہو جاتی ہے تو وہ نماز عصر کا آخری وقت ہے جو نماز مغرب کے اول وقت سے متصل ہو جاتا ہے۔
 
س360۔ غروب آفتاب اور اذان مغرب میں کتنے منٹ کا فاصلہ ہو تا ہے ؟
 
ج۔ بظاہر یہ فاصلہ موسموں کے اختلاف کے ساتھ ساتھ گھٹتا بڑھتا رہتا ہے۔
 
س361۔ میں تقریباً گیارہ بجے رات ڈیوٹی سے گھر پلٹتا ہوں اور لوگوں کی زیادہ آمد و رفت کی وجہ سے ڈیوٹی کے دوران نماز مغربین نہیں پڑھ سکتا، تو گویا گیارہ بجے رات کے بعد نماز مغربین کا پڑھنا صحیح ہے ؟
 
ج۔ کوئی حرج نہیں ہے بشرطیکہ نصف شب نہ گذرنے پائے، لیکن کوشش کیجئے کہ گیارہ بجے رات سے زیادہ تاخیر نہ ہو بلکہ نماز کو اول وقت پڑھنے کی کوشش کیجئے۔
 
س362۔ کتنی رکعتی نماز وقت میں ادا ہو نا چاہئیے جس کے بعد ادا کا اطلاق صحیح ہو اور اگر شک ہو کہ اتنای مقدار وقت میں پڑھی گئی یا نہیں تو اس کا کیا حکم ہے ؟
 
ج۔ نماز کی ایک رکعت کا آخر وقت کے اندر انجام پانا ادا کے لئے کافی ہے ، اور شک ہو کہ کم از کم ایک رکعت کے لئے وقت ہے یا نہیں ، تو پھر ما فی الذمہ کی نیت سے نماز پڑھے اور ادا اور قضا کی نیت نہ کرے۔
 
س363۔ غیر مسلم ملکوں میں اسلامی جمہو ریہ کے سفارت خانوں اور کونسل خانوں کی طرف سے اداروں اور بڑے بڑے مراکز اور شہروں کے لئے اوقات نماز کے نقشے شائع ہو تے ہیں ان پر کس حد تک اعتبار کیا جا سکتھے ؟ اور دوسرے یہ کہ ان ملکوں کے دوسرے شہروں میں رہنے والوں کا کیا فریضہ ہے ؟
 
ج۔ معیار یہ ہے کہ مکلف کو اطمینان حاصل ہو جائے اور اگر مکلف کو ان نقشوں کے وقت کے مطابق ہو نے کا یقین نہ ہو ، تو اس پر واجب ہے کہ احتیاط کرے، اور اس وقت تک انتظار کرے کہ اسے وقت شرعی کے داخل ہو نے کا یقین حاصل ہو جائے۔
 
س364۔ صبح صادق اور صبح کاذب کے مسئلہ میں آپ کی کیا رائے ہے ؟ اور اس سلسلہ میں نمازی کی شرعی ذمہ داری کیا ہے ؟
 
ج۔ نماز اور روزے کے وقت کا شرعی معیار ، صبح صادق ہے اور اس کی تعیین و تشخیص کی ذمہ داری ہے۔
 
س365۔ ایک مدرسہ جس میں پورے دن کلاسیں ہو تی ہیں۔ اس کے ذمہ دار حضرات ظہرین کی جماعت کو تقریباً 2 بجے ظہر کے بعد اور عصر کی کلاسیں شروع ہو نے سے پہلے منعقد کراتے ہیں۔ تاخیر کی وجہ یہ ہے کہ صبح کی کلاسوں کے دروس اذان ظہر سے تقریباً پون گھنٹہ پہلے ختم ہو جاتے ہیں اور ظہر شرعی تک طلاب کا ٹھہرنا مشکل ہے۔ اس بنا پر اول وقت نماز ادا کرنے کی اہمیت کو مد نظر رکھتے ہوئے (ا س نماز کے بارے میں ) آپ کا کیا حکم ہے ؟
 
ج۔ اگر نماز کے اول وقت طلاب حاضر نہیں ہو سکتے تو نماز گزاروں کی خاطر تاخیر میں کوئی مضائقہ نہیں ہے۔
 
س366۔ کیا اذان ظہر کے بعد نماز ظہر کا پڑھنا اور نماز عصر کاوقت شروع ہو نے کے بعد نماز عصر کا پڑھنا واجب ہے اور کیا اسی طرح نماز مغرب و عشا کا پڑھنا بھی واجب ہے ؟
 
ج۔ وقت کے داخل ہو نے کے بعد نمازی کو اختیار ہے کہ وہ دونوں کو ملا کر پڑھے یا جدا جدا۔
 
س367۔ کیا چاندنی راتوں میں نماز صبح کے لئے 15 منٹ سے 20 منٹ تک انتظار کرنا واجب ہے ؟ جبکہ ہم جانتے ہیں کہ وقت کافی ہے اور طلوع فجر کا یقین حاصل کیا جا سکتھے ؟
 
ج۔ طلوع صبح صادق ،وقت نماز صبح اور ترک سحر کے وجوب کے سلسلے میں چاندنی راتوں یا اندہی ری راتوں میں کوئی فرق نہیں ہے اگرچہ اس سلسلے میں احتیاط بہتر ہے۔
 
س368۔صوبوں اور شہروں میں افق کے اختلاف کی وجہ سے اوقات شرعیہ میں جو اختلاف ہو تا ہے کیا دن رات کی واجب تمام نمازوں میں وہی وقت معیاد ہے ؟مثال کے طور پر اگر دو شہروں میں ظہر کے شرعی وقت میں 25 منٹ کا اختلاف ہو تو کیا دوسرے اوقات میں بھی اتناہی اختلاف ہو گا یا صبح و عشاء میں اس سے مختلف ہے ؟
 
ج: فجر ،ظہر یا غروب آفتاب کے وقت کا اندازہ ایک جیسا ہو نے کا لازمی نتیجہ یہ نہیں ہے کہ دوسرے اوقات میں بھی اتنا ہی فرق اور فاصلہ ہو بلکہ مختلف شہروں میں اکثر تینوں اوقات کا اختلاف متفاوت ہو تھے۔
 
س369:اہل سنّت نماز مغرب کو غروب شرعی سے پہلے پڑھتے ہیں ، کیا ہمارے لئے ایام حج یا دوسرے ایام میں ان کی اقتدا میں نماز پڑھنا اور اسی نماز پر اکتفا کر لینا جائز ہے ؟
 
ج۔ یہ معلوم نہیں ہے کہ ان کی نماز وقت سے پہلے ہو تی ہے ، لیکن ان کی جماعت میں شرکت کرنے اور ان کی اقتداء کرنے میں کوئی حرج نہیں ہے اور وہ نماز کافی ہے ، لیکن وقت نماز کا درک کرنا ضروری ہے۔ مگر یہ کہ وقت کے بارے میں بھی تقیہ کیا جائے۔
 
س370۔ ڈنمارک اور ناروے میں صبح کے سات بجے سورج نکلتا ہے اور اس وقت تک آسمان میں چمکتا رہتا ہے۔ جبکہ دوسرے نزدیکی ملکوں میں رات کے بارے بج چکے ہو تے ہیں۔ ایسی صورت میں میری نماز و روزہ کا کیا حکم ہے ؟
 
ج۔ نماز پنجگانہ کے لئے اس جگہ کے افق کا خیال رکھنا واجب ہے ، اور اگر دن کے طولانی ہو نے کی وجہ سے روزہ رکھنا شاق ہو تو اس وقت روزہ ساقط ہے اور بعد میں اس کی قضا واجب ہے۔
 
س371۔ سورج کی شعاعیں تقریباً سات منٹ میں زمین تک پہنچ جاتی ہیں ، آیا نماز صبح کے وقت کے ختم ہو نے کی معیار طلوع آفتاب ہے یا اس کی شعاعوں کا زمین تک پہنچنا ہے ؟
 
ج۔ معیار طلوع آفتاب اس کا اس افق میں دیکھا جانا ہے جہاں نماز گزار موجود ہے۔
 
س 372۔ ذرائع نشر و اشاعت ہر روز آنے والے دن کے شرعی اوقات کا اعلان کرتے ہیں کیا ان پر اعتماد کرنا جائز ہے اور ریڈیو و ٹیلی ویژن کے ذریعہ نشر کی جانے والی اذان کو وقت کے داخل ہو جانے کا معیار بنایا جا سکتا ہے ؟
 
ج۔ معیار یہ ہے کہ مکلف کو وقت کے داخل ہو جانے کا اطمینان حاصل ہو جائے۔
 
س373۔ کیا اذان کے شروع ہو تے ہی نماز کا وقت شروع ہو جاتا ہے یا اذان کے ختم ہو نے کا انتظار کرنا واجب ہے اور اس کے بعد نماز کو شروع کرنا چاہئیے؟ اور اسی طرح کیا اذان کے شروع ہو تے ہی روزہ دار کے لئے افطار کرنا جائز ہے یا یہ کہ یہاں بھی آخر اذان تک انتظار کرنا واجب ہے ؟
 
ج۔ اگر اس بات کا یقین ہو کہ وقت داخل ہو جانے کے بعد اذان شروع ہوئی ہے تو آخر اذان تک انتظار کرنا واجب نہیں ہے۔
 
س374۔ کیا اس شخص کی نماز صحیح ہے جس نے دوسری نماز کو پہلی نماز پر مقدم کر دیا ہو جیسے عشاء کو مغرب پر؟
 
ج۔ اگر غلطی یا غفلت کی وجہ سے مقدم کیا ہو اور پوری نماز پڑھ ڈالی ہو تو اس کے صحیح ہو نے میں کوئی اشکال نہیں ہے لیکن اگر اس نے جان بوجھ کر ایسا کیا ہے تو وہ نماز باطل ہے۔

نماز کی اہمیت اور شرائط...................................فہرست................................................قبلہ کے احکام

 

 


فائل اٹیچمنٹ:
حالیہ تبصرے

اس کہانی کے بارے میں تبصرے

     
امنیت اطلاعات و ارتباطات ناجی ممیزی امنیت Security Audits سنجش آسیب پذیری ها Vulnerability Assesment تست نفوذ Penetration Test امنیت منابع انسانی هک و نفوذ آموزش هک